اور جسے اللہ عزت دے۔۔!!

لاہور(نیوز ڈیسک ) بھارتی وزیراعظم نریندر مودی پاکستان اور ایران کے درمیان تنازعہ پیدا کرتا رہا ہے۔ نجی ٹی وی چینل پر گفتگو کرتے ہوئے تجزیہ نگار ڈاکٹر شاہد مسعود کی جانب سے کہا گیا ہے کہ نریندر مودی نے ہمیشہ کوشش کی ہے کہ پڑوسی ممالک سے پاکستان کے تعلقات میں

” ”
” ”
بہتری پیدا نہ کر سکے۔ بات کرتے ہوئے تجزیہ نگار کا کہنا تھا کہ بھارت کو اب اپنے وزیراعظم کے رویے کی وجہ سے ہر طرف سے پریشانی کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے، پاکستان اور افغانستان کے درمیان تنازعے میں بھی نریندر مودی کا ہاتھ رہا ہے۔بھارت کی موجودہ صورتحال پر بات کرتے ہوئے تجزیہ نگار کا کہنا تھا کہ نریندر مودی کے بیانات اور دیگر ممالک کے ساتھ سلوک نے اب بھارت کو اس مشکل میں لا کر کھڑا کر دیا ہے جس کے بعد ہر طرف سے اس کی مدد کےر استے بند ہو چکے ہیں۔خیال رہے کہ بھارت کو حالیہ چین کے ساتھ جھڑپ کے بعد شدید مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔ چین کے علاوہ دیگر ممالک جن میں بھوٹا اور نیپال بھی شامل ہیں کی جانب سے سرحدی مشکلات کا سامنا کرنا پڑا تھا۔چین سے عبرتناک شکست کے بعد نریندر مودی کو عالمی سطح پر خوب تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا، تاہم بھارتی فوج کے جوانوں کے ہلاک ہونے پر بھارت میں سے بھی نریندر مودی کی مخالفت پیدا ہو گئی تھی، تاہم یوں محسوس ہورہا تھا کہ بھارت اب اپنی توپوں کا رخ پاکستان کی طرف کر دے گا، لیکن اسے اس میں بھی ناکامی کا سامنا کرنا پڑا تھا۔ اسی موضوع پر بات کرتے ہوئے اب تجزیہ نگار ڈاکٹر شاہد مسعود کی جانب سے انکشاف کیا گیا ہے کہ ماضی میں پاکستان کے افغانستان اور ایران سے تعلقات خراب کرنے کے پیچھے بھی نریندر مودی کا ہاتھ تھا۔ تاہم اب ایران اور چین کے درمیان بڑھتی ہوئی قربتوں نے خطے کا رخ ہی تبدیل کر دیا ہے.

source:https://hassannisar.pk/

50% LikesVS
50% Dislikes