چیزیں اُدھار دینے سے انکار۔۔!!سابق سینیٹر کے بیٹے نے دُکاندار کی دھلائی کر دی، منع کرنے پر خاتون کے ساتھ کیا سلوک کیا گیا؟ پورا پاکستان غصے سے آگ بگولہ

اسلام آباد(نیوز ڈیسک ) سابق سینیٹر کے بیٹوں کا ادھار نہ دینے پر دکاندار پر تشدد۔ اسلام آباد میں پیش آنے والے اس واقع میں ایک سابق سینیٹر کے بیٹوں نے ایک دکاندار پر صرف اس لئے تشدد کر ڈالا ہے کیونکہ اس نے انہیں ادھار دینے سے انکار کر دیا تھا۔ اس

” ”
” ”
حادثے کے بعد بات کرتے ہوئے پولیس کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ واقعہ گزشتہ شام 4 بجے تھانہ شالیمار کے سیکٹر الیون ایف میں واقع نجی ٹاور میں پیش آیا، پولیس کے پہنچنے پر تینوں ملزمان فرار ہوگئے اور واقعے کے وقت کسی شخص نے پولیس کو اطلاع نہیں دی۔
مزید بتایا گیا ہے کہ ٹک شاپ کے مالک نے ادھار دینے سے انکار کیا جس پر سابق سینیٹر کے دو بیٹوں نے دکاندار پر تشدد کیا اور خاتون کی مداخلت پردونوں ملزمان نے خاتون کو گالیاں بھی دیں، بعدازاں دونوں بھائی موقع سے فرار ہو گئے۔اس حوالے سے پولیس حکام کی جانب سے مزید کہا گیا ہے کہ واقع کی اطلاع ملنے کے بعد ملزمان کی گرفتاری کے لئے کارروائی کا آغاز کر دیا ہے جس کے بعد اب گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔خیال رہے کہ پاکستان میں اس نوعیت کے واقعات پہلے بھی پیش آتے رہے ہیں جہاں طاقت کے استعمال پر غریبوں پر ظلم کیا جاتا رہا ہے۔ پاکستان میں رہتے ہوئے ایک سیاسی رہنما ہونے با اثر سمجھا جاتا ہے، ماضی میں بھی اس طرح کے واقعات سامنے آتے رہے ہیں جہاں سیاستدانوں کے بچوں نے عام شہریوں کو تشدد کا نشانہ بنایا ہے۔ تاہم ان معاملات میں مقدمہ درج کر لیا جاتا ہے لیکن عموماََ کارروائی اس وجہ سے نہیں ہو پاتی کیونکہ ملزمان بااثر ہوتے ہیں۔اس معاملے میں بھی سابق سینیٹر کے بیٹوں کا ادھار نہ دینے پر دکاندار پر تشدد کر ڈالا ہے جس کے بعد اب پولیس کی جانب سے مقدمہ درج کر کے گرفتاری کے لئے چھاپے مارے جا رہے ہیں۔ خیال رہے کہ یہ واقع گزشتہ شام 4 بجے تھانہ شالیمار کے سیکٹر الیون ایف میں واقع نجی ٹاور میں پیش آیا، پولیس کے پہنچنے پر تینوں ملزمان فرار ہوگئے۔

source:https://hassannisar.pk/

50% LikesVS
50% Dislikes